نیل پالش لگانے کا حکم

سوال:کیا نیل پالش لگاسکتے ہیں یا نہیں ؟میں نے کسی سے سناہے کہ اگرکسی نے نیل پالش لگائی اور اس کا اسی حالت میں انتقال ہوجائے تواس کا غسل بھی نہیں ہوتا۔کیا یہ بات ٹھیک ہے؟
جواب:ناخن پالش لگانے سے اس کی تہہ جم جاتی ہے،جب تک اسے صاف نہ کردیا جائے پانی نیچے نہیں پہنچ سکتا،ناخن پالش کو صاف کیے بغیروضو اور غسل نہیں ہوتا۔نیز اگرکسی کاانتقال اس حال میں ہوجائے کہ ناخن پالش لگی ہوتو علماء نے لکھا ہے کہ ناخن پالش صاف کرکے اسے غسل دیا جائے گا۔شہیداسلام حضرت مولانامحمدیوسف لدھیانویؒ اسی طرح کے ایک سوال کے جواب میں تحریرفرماتے ہیں:

سوال:اگرکہیں موت آگئی توناخن پالش لگی عورت کی میت کاغسل صحیح ہوجائے گا؟
جواب:اس کا غسل صحیح نہیں ہوگا،اس لیے ناخن پالش صاف کرکے غسل دیاجائے۔[آپ کے مسائل اوران کاحل،عنوان:ناخن پالش والی میت کی پالش صاف کرکے غسل دیں،جلد:3،صفحہ:151،مطبوعہ:مکتبہ لدھیانوی کراچی]فقط واللہ اعلم

شادی کے لیے وظیفہ
سوال:اگرشادی میں رکاوٹ ہوتواس کاکیاحل ہے کونسی دعا پڑھنی چاہیے؟
جواب:نمازعشاء کے بعد اول وآخر گیارہ گیارہ مرتبہ درود شریف اوردرمیان میں گیارہ سومرتبہ ’’یاَلَطِییفْ‘‘ پڑھ کراللہ تعالیٰ سے دعاکریں۔

معدوم شیء کی بیع کرنا
سوال:سوال یہ ہے کہ حق تعلی یعنی صرف فضاء کی بیع کرنا جائز ہے یا نہیں ؟اور چونکہ آج کل یہ مسئلہ بہت زیادہ لوگوں کو پیش آتاہے ،عمارت وجود میں نہیں آتی پہلے سے فلیٹیں فروخت کردی جاتی ہیں وغیرہ۔،لہذااگرکوئی متبادل صورت شریعت میں ہو تواس سے آگاہ فرمائیں۔
جواب:حق تعلی یعنی فضاکی بیع کوعدم مال ہونے کی بناپرفقہاء کرام نے ناجائزلکھاہے۔البتہ یہ صورت اختیارکی جاسکتی ہے کہ وجودمیں آنے سے قبل کسی شئی کی خریدوفروخت کی بجائے وعدہ بیع کرلیاجائے اوروعدہ بیع کی صورت میں کچھ رقم ایڈانس کے طورپررکھی جاسکتی ہے۔اورجب وہ شئی وجودمیں آجائے پھرمکمل طورپرخریدوفروخت کی بات کردی جائے۔ (الھدایۃ 3/46ط:المکتبہ الاسلامیۃ)

نیند کے لیے وظیفہ
سوال:مجھے نیندنہیں آتی ،بے سکونی ہوتی ہے،براہ کرم کوئی دعا بتلادیں۔
جواب:حدیث شریف میں ہے کہ حضرت خالدبن ولیدرضی اللہ تعالیٰ عنہ نے نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم سے نیندنہ آنے کی شکایت فرمائی توآپ صلی اللہ علیہ وسلم نے مندرجہ ذیل دعاانہیں سکھائی۔اَللّھْمَّ رَبَّ السَّمَاوَاتِ وَمَا اَظَلَّت وَرَبَّ الارَضِینَ وَمَا اقَلَّت وَرَبَّ الشَّیَاطِینِ وَمَا اضَلَّت ْ کن لی جَارًا مِن شَرِّ جَمِیعِ الجِنِّ وَالاانسِ ، واَن یْفرَطَ عَلَی اَحَد مِنھم اون یْؤیذِیَنی عَزَّ جَارْک وَجَلَّ ثَنَاؤْک وَلا اِلَہَ غَیرْکہَ.[المعجم الکبیرللطبرانی،جلد:4،صفحہ:174،مطبوعہ:بیروت]لہذا اس دعاکے پڑھنے کااہتمام کریں۔

Electrolux