واشنگٹن میں ویٹیکن کے سفارت خانے کے باہر20 سال سے احتجاج

اپنے حقوق کے لیے احتجاج تو دنیا بھر میں ہوتے رہتے ہیں مگرامریکی دار الحکومت واشنگٹن میں ایک شخص ویٹیکن کے سفارت خانے کی عمارت کے باہر مسلسل 20 سال سے احتجاج کررہا ہے۔عرب ٹی وی کے مطابق جون فوجنسکی نامی شخص نے بتایاکہ آج سے 60 برس قبل ایک پادری نے لاطینی زبان کی تعلیم حاصل کرنے کے دوران اس کی توہین اور تذلیل کی تھی جسے کوئی انصاف نہیں دیا گیا۔فوجنکسی روزانہ آٹھ گھنٹے تک ویٹیکن کے سفارت خانے کے باہر احتجاجی دھرنا دیتا ہے۔ اس دوران لوگوں کی بڑی تعداد کی وہاں سے آمد ورفت رہتی ہے۔ اگر موسم ٹھیک ہو تو وہ ایک احتجاجی بینر بھی آویزاں کرتا ہے مگر بارش، سردی، برف باری شدید موسم میں بینر کے بغیر احتجاج کرتا ہے۔فوجنسکی نے 54 سال کی عمر میں احتجاج شروع کیا۔ آج اس کی عمر 75 سال ہے۔ اس نے دو عشروں کا یہ احتجاج تنہائی میں کیا مگر بعض اوقات کوئی راہ گیر اس کے پاس آکر بیٹھ جاتا ہے۔ احتجاج کے بعد وہ بقیہ اوقات بسوں اور ٹرینوں کو آتے جاتے دیکھتے گزارتا ہے اور اس کے بعد گھر لوٹ جاتا ہے۔

Electrolux